Home / World / طوفان کیار کی شدت: کراچی میں سمندر کا پانی سڑک پر آگیا

طوفان کیار کی شدت: کراچی میں سمندر کا پانی سڑک پر آگیا

کراچی: سمندری طوفان کیار  کی شدت سے کئی ساحلی بستیاں زیر آب آگئیں۔

طاقتور ترین سمندری طوفان ’کیار‘ پاکستان سے نہیں ٹکرائے گا اور عمان کی طرف جائے گا لیکن طوفان نے 700 کلومیٹر کے فاصلے سے سمندر میں جوش بھر دیا ہے۔

سمندری طوفان کے باعث رات گئے سمندر کی سطح بلند ہوگئی اور ساحلی پٹی پر واقع کئی علاقے زیر آب آگئے، ابراہیم حیدری کے علاقے ریڑھی گوٹھ، لٹھ بستی اور چشتہ گوٹھ کے گھروں میں سمندری پانی داخل ہوگیا۔

گھروں میں پانی داخل ہونے پر لوگ خوفزدہ ہوگئے، لٹھ بستی میں 100 سے زائد کچے مکانوں کو نقصان پہنچا جبکہ 500 سے زائد افراد کو محفوظ مقام پر منتقل کیا گیا۔

طوفان کی شدت کا اندازہ اس سے لگایا جاسکتا ہے کہ ہاکس بے کے ساحل پر اونچی لہروں نے کنکریٹ کی رکاوٹوں کو خاطر میں نہ لاکر اپنا راستہ بنایا جس کے باعث سمندری پانی سڑک پر آگیا جب کہ ٹھٹہ کی ساحلی پٹی بھی زیر آب گئی۔

سمندری پانی نے ڈی ایچ اے گالف کلب کے کچھ حصوں کو ڈبودیا اور بوٹنگ کلب کو بھی زد پر لے لیا۔ گوادر میں سمندری لہروں سے پسنی اور اوماڑہ کے نشیبی علاقے بھی متاثر ہوئے ہیں۔

’سائیکلون کیار کراچی سے 750 کلو میٹر دور ہے‘

محکمہ موسمیات کے مطابق بحیرہ عرب سے اٹھنے والا سپر سائیکلون کیار شمال مغرب کی جانب بڑھ رہا ہے اور  سمندری طوفان کا رخ عمان کی جانب ہے جو کراچی سے 700کلومیٹر دور ہے۔

ڈائریکٹر محکمہ موسمیات سردار سرفراز نے بتایا کہ 30 اکتوبر تک مغربی ہواؤں کا سسٹم سائیکلون پر اثر انداز ہوسکتا ہے، مغربی ہواؤں کا یہ سسٹم طوفان کو کمزرو کردے گا یا رخ جنوب کی جانب کرسکتا ہے البتہ سائیکلون جنوب کی جانب ہونے پر پاکستان کے ساحلی علاقوں میں ہلکی بارش ہوسکتی ہے اور گہرے سمندر میں لہریں 3 سے 4 میٹر تک بلند ہوسکتی ہیں۔

سردار سرفراز کے مطابق طوفان کیار کے اثرات 2 نومبر تک رہیں گے اور 30 اکتوبر کو بھارت کے جنوب مغرب میں کرناٹک کے قریب ہوا کا ایک اورکم دباؤ بن سکتا ہے جس کے باعث ہوا کا کم دباؤ ڈپریشن یا سائیکلون میں تبدیل ہوسکتا ہے، سائیکلون بننے کی صورت میں اسے ماہا کا نام دیا جائے گا۔

ساحل سمندر  جانے پر پابندی عائد

بحیرہ عرب میں طوفان کے باعث کمشنر کراچی نے شہر میں دفعہ 144 نافذ کردی ہے۔

طوفان کے باعث ماہی گیروں کو سمندر سے واپس بُلالیا گیا جب کہ کراچی کی انتظامیہ نے ساحل سمندر پر جانے، مچھلی کے شکار اور کشتی رانی پر 5 نومبر تک پابندی لگادی ہے۔

About Editor Tehqiq Nama

Check Also

وزیراعظم بہت جلد استعفیٰ دینے والے ہیں: بلاول کا دعویٰ

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ کٹھ پتلی وزیر اعظم …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے